‏چلے جانے کی عُجلت میں

‏چلے جانے کی عُجلت میں
دِلوں پر جو گُزرتی ہے
مُسافِر کب سمجھتے ہیں
اُنہیں احساس کب ہوتا ہے
زادِ راہ سمیٹیں تو کسی کا
دل سِمٹتا ہے
رَگوں میں خُون جَمتا ہے
کسی کے الوداعی ہاتھ ہِلتے ہیں
یہاں دل ڈوب جاتا ہے
مگر جانے کی عُجلت میں
مُسافِر کب سمجھتے ہیں… 🥀

تبصرے کیجئے

Click here to post a comment

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.